ایک دانشور جو نہایت ذہین تھا اور اسے اپنی یادداشت پر بہت گھمنڈ تھا اور وہ کسی

ایک دانشور جو نہایت ذہین تھا اور اسے اپنی یادداشت پر بہت گھمنڈ تھا اور وہ کسی بھی بات کو کافی عرصہ تک یاد رکھتا تھا۔
ایک روز وہ اپنے کام میں مصروف تھا کہ اس کے پاس ایک شیطان آیا اور کہنے لگا۔
تجھے اپنی یادداشت پر بہت گھمنڈ ہے میرے ایک سوال کا جواب دو۔ دانشور نے کہا پوچھو۔
شیطان نے کہا ، انڈہ کھاتے ہو۔ دانشور نے کہا۔ ہاں۔ یہ پوچھ کر شیطان چلا گیا۔ اس بات کو عرصہ گزر گیا۔ پچیس سال بعد دانشور جو بوڑھا ہو گیا تھا۔ ایک روز بیٹھا اپنے کام میں مشغول تھا کہ پھر شیطان آگیا اور کہا کیسا
’’ابلا ہوا‘‘ دانشور نے فوراً جواب دیا۔

Share this