ایک دوست نے دوسرے کو سگریٹ پیتے دیکھا تو پوچھا “ یار تم تو سگریٹ نوشی چھوڑ رہے ت

ایک دوست نے دوسرے کو سگریٹ پیتے دیکھا تو پوچھا “ یار تم تو سگریٹ نوشی چھوڑ رہے تھے پھر یہ کیا“
میں‌مرحلہ وار سگریٹ نوشی چھوڑ رہا ہوں پہلے مرحلے میں‌ میں ‌نے نوشی کو چھوڑ دیا ہے۔
دوست نے پرسکون لہجے میں سگریٹ کا کش لگاتے ہوئے کہا۔

Share this