ایک صاحب جن کانام احسان تھا۔ اپنے دوست سے کہنے لگے۔یار میں شاعری کرنے جارہاہوں

ایک صاحب جن کانام احسان تھا۔ اپنے دوست سے کہنے لگے۔
یار میں شاعری کرنے جارہاہوں لیکن سمجھ میں نہیں آرہاہے کہ تخلص کیارکھو۔
دوست نےفورا جواب دیا:فراموش رکھ لو

Share this