''اے۔۔۔۔مسٹر،،پروفیسرصاحب نے کلاس میں سب

''اے۔۔۔۔مسٹر،،پروفیسرصاحب نے کلاس میں سب سے پیچھے کھڑے ہوئے ایک نوجوان کو مخاطب کیا۔۔
''بتاو،نیوٹن نے''لاءآف گریویٹی''کب پیش کیاتھا؟''
''مجھے نہیں معلوم سر''نوجوان نے جواب دیا۔۔
''اچھا یہ بتاو زمین سورج سے کتنے نوری سال کے فاصلے پر واقع ہے؟''پروفیسر نے ناگواری سے دوسرا سوال کیا۔۔
''میں نہیں جانتا سر''نواجون نے ایک بار پھر بے نیازی سے جواب دیا۔۔
''اچھا یہ بتاو نظریہ اضافت کسے کہتے ہیں؟''پروفیسر صاحب نے گویا بڑی مشکل سے اپنا غصہ ضبط کرتے ہوئے پوچھا۔۔
''مجھے نہیں معلام سر''نوجوان نے ایک بار پھر وہی جواب دیا۔۔
''خدا کی پناہ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔''اب پروفیسر صاحب کا چہرہ غصے سے سرخ ہوگیا۔۔۔''تمہیں تو فزکس کی بنیادی باتیں بھی معلوم نہیں۔۔۔۔اسکول کا بچہ بھی ان سوالوں کے جواب دے سکتا ہے،آخر تم نے سوچ کیا رکھا ہے؟تم فزکس کےامتحان میں پاس کیسے ہوگے؟''
''میرا فزکس کے امتحان سے کیا تعلق ہے جناب؟میں تو اس کمرے کا پنکھا ٹھیک کرنے آیا ہوں ۔۔۔الیکڑیشن ہوں۔۔۔۔۔۔۔۔''نوجوان نے بیزاری سے جواب دیا۔۔