زرداری کے لطیفے

اس سیکشن میں صدر زرداری سے منسوب لطیفے موجود ہیں۔ رحمان ملک صاحب کی اجازت کے بغیر کوئی لطیفہ شامل نہیں کیا جائے گا۔

---آخر کار زرداری دوزخ کی سزا ختم کر کے

---آخر کار زرداری دوزخ کی سزا ختم کر کے جنت میں چلا ہی گیا۔۔۔
اور وہاں پھر سے اپنا زورداری پن دکھانے لگا۔
فرشتوں سے کہنے لگا کے مجھے
لسی چاہیے میں نے لسی ہی پینی ہے۔
خیر فرشتوں نے اس کو لسی لا ہی دی۔۔۔
اور اگلی صبح
زورداری صاحب کو جنت کے چوک میں کھڑا کے لترول اور چھترول ہو رہی تھی اور پھر اس کو الٹا لٹکا دیا گیا۔۔۔۔۔۔۔۔۔
جنت کے تمام لوگ پریشان تھے کہ یہ تو اب جنتی ہے اب کیا ہوا۔
فرشتوں نے غصے میں آکر کہا کہ کل اس نے لسی کی فرمائش کی تھی۔ اور اس نے چوول یہ ماری کہ لسی پینے کے بعد اس کی تھوڑی سی دودھ کی نہروں میں ڈال دیا ۔۔۔اور اب ساری دودھ کی نہریں پر جھاگ لگ گئی ہے۔۔
چھترول تو ہونی ہی تھی

نواز شریف ، آصف زرداری اور پرویزالہی غ

نواز شریف ، آصف زرداری اور پرویزالہی غلطی سے انڈیا کا باڈر کراس کر گیے
اُن کو انڈین آرمی نے پکڑ کر عدالت میں پیش کر دیا
اور عدالت نے اُن کو دس دس کوڑوں کی سزا سنائی
جب دروغا کوڑے لگانے لگا تو اُس نے اُن سے اُن کی کوئی خواہش پوچھی
پرویزالہی بولا میرے پیچھے دو تکیے باند کر کوڑے لگایں
نواز شریف بولا میرے پیچھے پانچ تکیے باند کر کوڑے لگایں
آصف زرداری بولا میرے پیچھے پہلے دو تکیے باندیں اس کے باد پرویزالہی کو باندیں
اس کے باد نواز شریف کو باندیں
پھر دس کی بجاے بیس کوڑے لگایں

ملک کی چار بڑی پارٹیوں کا امتحان لینے

ملک کی چار بڑی پارٹیوں کا امتحان لینے کی خاطر ان کے سربراہوں کو تین تین سیب دئیے گئے اور ان سے پوچھا گیا کہ وہ ان کو چار پچوں میں کیسے تقسیم کرینگے۔
سب سے پہلے نواز شریف سے پوچھا گیا کہ وہ یہ سیب کیسے تقسیم کریں گے۔
وہ بولے جناب میں سب سے بڑے بچے سے گزارش کروں گا کہ وہ بڑا ہونے کے ناطے قربانی دے اور سیب سے دستبردار ہو جائے۔
دوسرے نمبر پر آصف زرداری سے پوچھا گیا کہ وہ کس طرح تقسیم کرینگے۔زرداری بولے سائیں میں کہیں سے ایک سیب حاصل کروں گا اور چاروں بچوں کو برابر تقسیم کرونگا چاہے مجھے اس کے لئے چوری ہی کیوں نہ کرنی پڑے۔
تیسرے نمبر پر قاضی حسین احمد سے پوچھا گیا انہوں نے کہا کہ اسلام مساوات کا درس دیتا ہے اس لئے میں تینوں سیب چار مساوی حصوں میں کاٹ لونگا اور چاروں بچوں کو تین تین حصے تقسیم کر دونگا۔
آخر میں الطاف حسین سے پوچھا گیا کہ وہ کیا طریقہ استمعال کریں گے۔ وہ فوراً بولے یہ تو بہت آسان ہے ایک بچے کو اڑا دو ۔

زرداری کی زمین شادبادبجلی نہ آئے گھن

زرداری کی زمین شادباد
بجلی نہ آئے گھنٹوں بعد
تو نشان کرپشن عالیشان
ارض زردارستان
مرکز امریکی مفادات
ارض زرداری کا نظام
آٹے گیس بجلی کا بحران
قوم ملک کا بیڑا غرق
قدیر، افتخار پائندہ باد
جانے کیسے پہنچے گے منزل مراد
پرچم ستارہ و ہلال
خون میں رنگا سارا سال
عوام کا مہنگائی سے برا حال
صرف لٹیروں ہی کا استقبال
آخر میں رہ نہ جائے صرف ملال

شہر میں آٹے کی دکانپہ لمبی لائن لگی

شہر میں آٹے کی دکان
پہ لمبی لائن لگی ھوئی تھی
اسی میں ایک شخص غصے میں آگیا
اور کہا میں زرداری کو مارنے جارھا ھوں
تھوڑی دیر بعد وہ واپس آیا
لوگوں نے پوچھا کیا ھوا
زرداری کو مار دیا
اس نے جواب دیا
وھاں تو اسے بھی بڑی لائن لگی ھوئی ھے

اک زرداری موٹا تازہ تھاجو مزے سے ملک ک

اک زرداری موٹا تازہ تھا
جو مزے سے ملک کو کھاتا تھا
ڈنگ ڈونگ ، ڈنگ ڈونگ
زرداری نے بیٹھ کے سوچا یہ
بی بی کو دیں گے دھوکہ یہ
بی بی کو ماریں گے گولی
اور کھائیں گے ملک کو
ڈنگ ڈونگ ، ڈنگ ڈونگ
پر آرمی بڑی سیانی تھی
زرداری کی شامت آنی تھی
پھر آرمی بیچ سے نکل گئی
کیوں کے مشرف کی نیت بدل گئی
پھر زرداری بن گیا نیا ڈون، ڈنگ ڈونگ، ڈنگ ڈونگ
ڈنگ ڈونگ ببل