لطیفہ

warning: Creating default object from empty value in /home/freeurdujokes/public_html/modules/taxonomy/taxonomy.pages.inc on line 33.

ایک امریکی اخبار نے اپنے رپورٹر کو سمن

ایک امریکی اخبار نے اپنے رپورٹر کو سمندر کے سفر پر بھیجا جس روز جہاز جاپان کی ایک بندرگاہ پر لنگرانداز ہوا۔ اس روز بڑے زور کا طوفان آیا۔ جس سے بڑے پیمانے پر تباہی ہوئی۔ اخبار کا ایڈیٹر بڑا خوش تھا کہ کیونکہ صرف اسی اخبار کا رپورٹر موقع پر موجود تھا۔
ایڈیٹر کو تار کا شدت سے انتظار تھا۔ بالآخر رات گئے تار موصول ہوا۔ لکھا تھا۔ میں بخیریت ہوں۔ فکر مند نہ ہوں۔‘‘

ایک افسر نے ایک سپاہی کی بہادری جانچنے

ایک افسر نے ایک سپاہی کی بہادری جانچنے کے لیے اچانک اس کے کاندھے پر بندوق رکھ کر فائر کر دیا۔ وہ سپاہی جوں کا توں کھڑا رہا۔
افسر نے خوش ہو کر کہا۔ ’’ہم تم بہادری اسے خوش ہوئے ہیں۔ اسی خوشی میں لو ہمارا کوٹ انعام میں۔
سپاہی نے کہا۔ ’’مگر مجھے کوٹ کی نہیں پتلون کی ضرورت ہے‘‘
افسر نے حیرت سے پوچھا۔ ’’پتلون کی ! مگر کیوں؟
سپاہی نے جواب دیا۔ ’’کیونکہ آپ کے فائر سے میری پتلون خراب ہو گئی ہے۔

امپائر نے ایک کھلاڑی کو ایل بی ڈبلی

امپائر نے ایک کھلاڑی کو ایل بی ڈبلیو دے دیا۔ کھلاڑی بہت خفا ہوا اور پویلین کی طرف واپس جاتے ہوئے سفید کوٹ والے سے مخاطب ہوا۔
’’جس طرح تم نے مجھے ایل بی ڈبلیو دیا ہے اس سے مجھے یقین ہو گیا ہے کہ تمہیں عینک کی ضرورت ہے۔‘‘
’’عینک کی ضرورت تمہیں بھی ہے۔‘‘ سفید کوٹ والے نے کہا۔ کیونکہ میں امپائر نہیں آئس کریم بیچنے والا ہوں‘‘۔

استاد : میری ایک کتاب گم ہے جسے پتا ہو

استاد : میری ایک کتاب گم ہے جسے پتا ہو وہ بتا دے۔ میں کتاب اسی کو دے دوں گا اور اس کے علاوہ پچاس روپے نقد انعام بھی دوں گا۔
ایک شاگرد جناب ! پچاس روپے دے دیں کتاب پہلے ہی میرے گھر میں ہے۔

استاد اتفاق کے مسئلے پر گفتگو کر رہے ت

استاد اتفاق کے مسئلے پر گفتگو کر رہے تھے۔ جب انہیں یقین ہو گیا کہ بچے ان کی بات سمجھ چکے ہیں تو انہوں نے سوال کیا: کیا تم میں سے کوئی اتفاق کے بارے میں مثال دے سکتا ہے؟
ایک بچہ بولا: جی ہاں آپ کو حیرت ہو گی کہ میرے ابو اور امی کی شادی اتفاق سے ایک ہی دن ہوئی۔

Syndicate content