لطیفہ

warning: Creating default object from empty value in /home/freeurdujokes/public_html/modules/taxonomy/taxonomy.pages.inc on line 33.

ایک آدمی رنگ برنگی جوتیوں کی بوری بھر کر

ایک آدمی رنگ برنگی جوتیوں کی بوری بھر کر لایا تو بیوی نے اس سے پوچھا " یہ سب کہاں سے لائے ہیں آپ؟"
شوہر نے کہا " تمہیں نہیں پتہ آج میری پہلی تقریر تھی۔"

ایک دوست نے دوسرے دوست سے کہا۔ "سنا ہے

ایک دوست نے دوسرے دوست سے کہا۔ "سنا ہے تمہارے والد صاحب کو ڈاکٹروں نے جواب دے دیا"۔ وہ دوست ہکا بکا رہ گیا کہ یہ کیا کہہ رہا ہے جبکہ میرے والد صاحب تو بھلے چنگے ہیں۔ دوسرے دوست نے کہا تم یہ کیا بات ک

اچانک بڑی شدت کا طوفان بادوباراں آگیا۔ د

اچانک بڑی شدت کا طوفان بادوباراں آگیا۔ درخت جڑوں سے اکھڑنے لگے، گاڑیاں ایک دوسرے سے ٹکرا گئیں، مکانوں کی چھتیں اڑنے لگیں۔
ایک غائب دماغ پروفیسر یہاں وہاں بھاگ کر لوگوں کو جمع کر رہے تھے۔ وہ کہ رہے تھے "ہمیں اب یے سوچنا چاہئے کے ایسی حالت میں ہمیں کیا کرنا چاہئے؟"
ایک صاحب ان کو پکڑ کر ایک طرف لے گئے اور بولے۔ "سب سے پہلے گھر جا کر پتلون پہننی چاہئے۔"

ایک آدمی گنڈیریاں چوستے ہوئے جا رہا تھا

ایک آدمی گنڈیریاں چوستے ہوئے جا رہا تھا اور ساتھ ہی چھلکے بھی پھینکتا جا رہا تھا۔ اچانک اس کی نظر پیچھے پڑی تو دیکھا کہ اس کے پیچھے پیچھے دوسرا آدمی وہ چھلکے اٹھا اٹھا کر چوستا جا رہا ہے۔ اسے برا لگا اور بولا:" تم کتنے ندیدے ہو"
دوسرا آدمی:"تم بھی تو ندیدے ہو ذرا سا رس بھی نہیں چھوڑ رہے۔"
 
 

ایک آدمی کتا لے کر جا رہا تھا کہ دوسرے آ

ایک آدمی کتا لے کر جا رہا تھا کہ دوسرے آدمی نے یہ دیکھ کر کہا یہ گدھا کہاں لے کے جارہے ہو؟
ان صاحب نے جواب دیا: تمہیں نظر نہیں آرہا یہ گدھا ہے یا کتا۔
دوسرے آدمی نے جواب دیا: جی میں آپ سے نہیں کتے سے مخاطب ہوں۔

Syndicate content