لطیفے

warning: Creating default object from empty value in /home/freeurdujokes/public_html/modules/taxonomy/taxonomy.pages.inc on line 33.

(ہستے رہو)ایک گنجا دوسر لنگڑا اور تیسر

(ہستے رہو)
ایک گنجا دوسر لنگڑا اور تیسرا اندھا تینوں راستے پر بیٹھے تھے نزدیک سے بس گزری تو گنجے نے کہا او یار اس نے میرے بال خراب کر دیے لنگڑے نے کہا چلو اس کے پیچھے بھاگو اندھے نے کہا رکو مینے اس کے نمبر نوٹ کر لیے

(ہستے رہو)
ایک گنجا دوسر لنگڑا اور تیسرا اندھا تینوں راستے پر بیٹھے تھے نزدیک سے بس گزری تو گنجے نے کہا او یار اس نے میرے بال خراب کر دیے لنگڑے نے کہا چلو اس کے پیچھے بھاگو اندھے نے کہا رکو مینے اس کے نمبر نوٹ کر لیے

انگریزی کے مشہور ادیب آسکر وائلڈ کا ڈر

انگریزی کے مشہور ادیب آسکر وائلڈ کا ڈرامہ پہلی ہی رات فیل ہوگیا۔
دوسرے روز اس کے ایک دوست نے پوچھا۔
کہو یار! کل تمہارا ڈرامہ کیسا رہا؟
آسکر وائلڈ نے کہا۔
ڈرامہ بے حد کامیاب رہا۔ لیکن دیکھنے والے فیل ہوگئے۔

ملاقاتی نے مکان پر دستک دی۔ ننھے میاں

ملاقاتی نے مکان پر دستک دی۔ ننھے میاں باہر آئے تو ملاقاتی نے اس کے ابا جان کے بارے میں پوچھا۔
ننھے میاں بولے۔
آپ اپنا نام بتا دیجئے۔
تو کیا تمہارے اباجان میرے منتظر تھے۔
یہ تو مجھے معلوم نہیں، البتہ انہوں نے ایک شخص کا نام لے کر کہا تھا کہ اگر وہ آئیں تو کہہ دینا کہ اباجان گھر پر نہیں ہیں۔ اس لیے آپ پہلے اپنا نام بتائیں۔

دو دوست سڑک سے ملحق میدان میں گولف کھ

دو دوست سڑک سے ملحق میدان میں گولف کھیلنے میں

منہمک تھے۔ ایک دوست نے ہٹ لگانے کا ارادہ کیا کہ سڑک پر

ایک جنازہ آتا ہوا دکھائی دیا اس نے ہٹ لگانے کی بجائے سٹک

ہاتھ سے چھوڑ دی اور ہیٹ اتار کر احتراماً سر جھکا کر کھڑا ہو

گیا۔
جنازہ گذر گیا تو دوسرے دوست نے کہا۔
مجھے یہ جان کر بہت خوشی ہوئی کہ تم نے سچے دل سے

جنازے کا احترام کیا ہے واقعی ہمیں ہر جنازے کا اسی طرح

احترام کرنا چاہیے۔
بھئی . اتنا احترام کرنا میرا فرض تھا کیونکہ مرحومہ نے مسلسل

تیس برس بحیثیت بیوی میرا ساتھ دیاتھا۔

ایک مصور مالی مشکلات کا شکار تھا اور

ایک مصور مالی مشکلات کا شکار تھا اور چند ماہ سے دکان کا کرایہ ادا نہ کر سکا۔ کیونکہ کاروبار ذرا کم چل رہا تھا۔ مالک دکان اس مصور کے پاس گیا اور بولا۔ کئی ماہ ہو گئے تم نے کرایہ ادا نہیں کیا۔ مصور نے کہا چند برس لوگ اس ویران دکان کو دیکھ کر کہیں گے کہ فلاں مشہور مصورکبھی اس دوکان میں رہتا تھا۔
مالک دوکان نے کہا۔ اگر آج شام مجھے کرایہ نہ ملا تو لوگ یہ بات کل سے ہی کہنا شروع کردیں گے۔

Syndicate content