نئی دہلی میں انڈین ٹائمز کا صحافی ایک پا

نئی دہلی میں انڈین ٹائمز کا صحافی ایک پارک سے گزر رہا تھا کہ اس نے دیکھا ایک پاگل کتا ایک عورت پر حملہ کرکے اسے کاٹنے کے درپے ہے۔ اچانک ایک نوجوان نمودار ہوا اس نے کتے کو گردن سے پکڑ کر گھما کر دور پھنکا۔ کتا ڈر کر بھاگ گیا اور عورت کی جان بچ گئی۔
صحافی دوڑ کر اس نوجوان کے پاس گیا۔ اور بولا سر ! آپ مجھے اپنی تصویر اتارنے کی اجازت دیں اور اپنا نام پتہ بھی بتائیں میں کل اخبار میں آپکی بہادری کی خبر اس شہ سرخی کے ساتھ لگاؤں گا “ہندوستانی نوجوان نے جان پر کھیل کی عورت کی جان بچائی۔“
نوجوان نے تصویر بنوا کر کہا۔ لیکن سر میں بھارتی نہیں ہوں میں تو انگلینڈ سے آیا ہوں یہاں سیر کرنے۔
صحافی نے کہا کوئی بات نہیں میں آپکی بہادری کی خبر اس سرخی کے ساتھ لگاؤں گا کہ “انگلش شہری نے بھارتی عورت کی جان بچائی“
نوجوان نے مسکراتے ہوئے کہا “لیکن میں انگلش شہری نہیں بلکہ پاکستانی ہوں اور انگلینڈ میں کام کے سلسلے میں وہاں رہتا ہوں“ صحافی یہ سن کر چلا گیا۔ اگلے دن انڈین ٹائمز میں شہہ سرخی شائع ہوئی
“پاکستانی دہشت گرد نے پارک میں ایک کتے پر حملہ کرکے اسے زخمی کر دیا“

Share this