ڈاکٹر ، نرس کے لطیفے

warning: Creating default object from empty value in /home/freeurdujokes/public_html/modules/taxonomy/taxonomy.pages.inc on line 33.

دل کے مریض کا آپریشن ہونے والا تھا ، م

دل کے مریض کا آپریشن ہونے والا تھا ، مریض بہت گھبرایا ہوا تھا ،نرس نے اسے تسلی دیتے ہوئے کہا۔

’’تمہیں گھبرانے کی ضرورت نہیں ۔ ڈاکٹر صاحب کو تمہارے آپریشن میں کوئی دقت پیش نہیں آئے گی ۔ انہوں نے کل ہی ٹی وی پر بالکل اسی قسم کا آپریشن ہوتے ہوئے دیکھا ہے۔

ابتدائی طبی امداد کی کلاس میں ڈاکٹر نے ا

ابتدائی طبی امداد کی کلاس میں ڈاکٹر نے ایک زیر تربیت نرس سے پوچھا ۔
’’اگر تمہارے پاس کسی زخمی کو لایا جائے ، جس کے سر میں زخم ہوا اور اس سے بری طرح خون بہہ رہا ہو تو خون بند کرنے کے لئے کیا کرو گی؟‘‘
’’میں اس کی گردن پر کس کر پٹی باندھ دوں گی۔ ‘‘
نرس نے جواب دیا ۔

ڈاکٹر (نرس سے): اس بستر کا مریض کہاں گیا

ڈاکٹر (نرس سے): اس بستر کا مریض کہاں گیا؟
نرس: اسے سردی لگ رہی تھی تو میں نے اسے اس مریض کے ساتھ لٹا دیا جسے 104 درجے کا بخار ہے۔

مریض ڈاکٹر سے؛آپ کی نرس بہت اچھی ہے اس

مریض ڈاکٹر سے؛آپ کی نرس بہت اچھی ہے اس کا ہاتھ لگتے ہی میں ٹھیک ہو گیا ہوں
ڈاکٹر؛جانتا ہوں تھپر کی آواز یہاں تک آئی ہے

سنتاڈاکٹر سے: آپ نے نرس بہت اچھی رکھی ہے

سنتاڈاکٹر سے: آپ نے نرس بہت اچھی رکھی ہے۔ اس کاہاتھ لگتے ہی میں ٹھیک ہوگیا۔
ڈاکٹر : جانتاہوں۔ تھپڑ کی آواز محھے بھی سنائی دی تھی۔

Syndicate content