ھوٹل کے لطیفے

  • warning: Creating default object from empty value in /home/freeurdujokes/public_html/modules/taxonomy/taxonomy.pages.inc on line 33.
  • user warning: Table './freeurdujokes/cache_filter' is marked as crashed and should be repaired query: SELECT data, created, headers, expire, serialized FROM cache_filter WHERE cid = '1:28958ca0820fda26595d952c7d241d60' in /home/freeurdujokes/public_html/includes/cache.inc on line 27.
  • user warning: Table './freeurdujokes/cache_filter' is marked as crashed and should be repaired query: UPDATE cache_filter SET data = '<p>ایک شخص سوچتا ھے ھوٹل سے مفت کھانا کیسے کھاؤں۔ اس کا دوست اس کو کہتا ھے یہ کون سی مشکل بات ھے۔</p>\n<p>تم ایک مری ھوئی مکھی ساتھ لے جانا۔ خوب کھانا کھانا۔ جب پیٹ بھر جائے تو تھوڑا سا سالن مزید مانگنا۔ اس میں مکھی ڈال کر شور مچا دینا۔ وہ تمہاری منتیں کر کے بھیج دیں گے۔</p>\n<p>وہ ایسا ھی کرتا ھے۔ خالی جیب جا کے خوب کھاتا ھے۔ جب آخر میں کہتا ھے تھوڑا سا سالن مزید ڈال دیں تو بیرا کہتا ھے سر ھم معذرت خواہ ھیں سالن ختم ھو گیا ھے۔</p>\n<p>تو وہ گھبرا کے کہتا ھے اچھا پھر اس مکھی کا کیا کروں۔</p>\n', created = 1490849255, expire = 1490935655, headers = '', serialized = 0 WHERE cid = '1:28958ca0820fda26595d952c7d241d60' in /home/freeurdujokes/public_html/includes/cache.inc on line 112.
  • user warning: Table './freeurdujokes/cache_filter' is marked as crashed and should be repaired query: SELECT data, created, headers, expire, serialized FROM cache_filter WHERE cid = '1:6a23d012ca77d8af76025111e20a74b9' in /home/freeurdujokes/public_html/includes/cache.inc on line 27.
  • user warning: Table './freeurdujokes/cache_filter' is marked as crashed and should be repaired query: UPDATE cache_filter SET data = '<p>فرمابردار بیوی کیسی ہوتی ہے<br />\nشوھر: آج کھانے میں کیا بناؤ گی<br />\nبیوی: جو آپ کہیں<br />\nشوھر: واہ بھئی واہ ایسا کرو دال چاول بنا لو<br />\nبیوی: ابھی کل ہی تو کھائے تھے<br />\nشوھر: تو سبزی روٹی بنالو<br />\nبیوی: بچے نہیں کھائیں گے<br />\nشوھر: تو چھولے پوری بنالو چینج ہوجائے گا<br />\nبیوی: جی سا متلا جاتا ہے مجھے ھیوی ھیوی لگتا ہے<br />\nشوھر: یار آلو قیمہ بنالو اچھا سا<br />\nبیوی: آج منگل ہے گوشت نہیں ملے گا<br />\nشوھر: پراٹھہ انڈہ</p>\n', created = 1490849255, expire = 1490935655, headers = '', serialized = 0 WHERE cid = '1:6a23d012ca77d8af76025111e20a74b9' in /home/freeurdujokes/public_html/includes/cache.inc on line 112.
  • user warning: Table './freeurdujokes/cache_filter' is marked as crashed and should be repaired query: SELECT data, created, headers, expire, serialized FROM cache_filter WHERE cid = '1:82d54f9ee0182e0fc16a8c57754e35c2' in /home/freeurdujokes/public_html/includes/cache.inc on line 27.
  • user warning: Table './freeurdujokes/cache_filter' is marked as crashed and should be repaired query: UPDATE cache_filter SET data = '<p>ایک شخس نے ہوٹل میں کھانا کھایا اور اس کے بعد چمچہ صاف کرنے لگا۔ بیرا بھاگتا ہو اآیا۔ بابو جی چمچہ نہ صاف کریں وہ شخص بولا اگر صاف نہ کروں گا تو جیب گندی ہو جائے گی۔</p>\n', created = 1490849255, expire = 1490935655, headers = '', serialized = 0 WHERE cid = '1:82d54f9ee0182e0fc16a8c57754e35c2' in /home/freeurdujokes/public_html/includes/cache.inc on line 112.
  • user warning: Table './freeurdujokes/cache_filter' is marked as crashed and should be repaired query: SELECT data, created, headers, expire, serialized FROM cache_filter WHERE cid = '1:73194e6f544abd77979a8e4f1bf41914' in /home/freeurdujokes/public_html/includes/cache.inc on line 27.
  • user warning: Table './freeurdujokes/cache_filter' is marked as crashed and should be repaired query: UPDATE cache_filter SET data = '<p>ہوٹل میں ویٹر بھنی ہوئی مرغی کی پلیٹ رکھ کر جانے لگا تو گاہک نے اسے روک کر کہا۔ یہ دیکھو ، اس کی ایک ٹانگ کہاںگئی.؟ ویٹر نے جواب دیا۔ میرا خیال تھا کہ آپ اسے کھائیں گے اس کے ساتھ رقص نہیں کریں گے۔</p>\n', created = 1490849255, expire = 1490935655, headers = '', serialized = 0 WHERE cid = '1:73194e6f544abd77979a8e4f1bf41914' in /home/freeurdujokes/public_html/includes/cache.inc on line 112.
  • user warning: Table './freeurdujokes/cache_filter' is marked as crashed and should be repaired query: SELECT data, created, headers, expire, serialized FROM cache_filter WHERE cid = '1:0e09b5f600f83c5fdc030cc87e5e953a' in /home/freeurdujokes/public_html/includes/cache.inc on line 27.
  • user warning: Table './freeurdujokes/cache_filter' is marked as crashed and should be repaired query: UPDATE cache_filter SET data = '<p>ایک آدمی پرانی سی چھکڑا کار پر ہوٹل آیا اور ہوٹل کے ملازم سے بولا۔ بھئی ذرا کار کا خیال رکھنا ، میں چائے پینے جا رہا ہوں۔<br />\nتھوڑی دیر بعد اس نے واپس آ کر ملازم کو دو روپے ٹپ دی۔ ملازم نے کہا : دو روپے اور دیجئے۔<br />\nاس آدمی نے حیرت سے پوچھا وہ کس لیے؟<br />\nملازم: شرمندگی کے۔ کیونکہ جو بھی یہاں سے گزرتا تھا اس کار کو دیکھ کر یہی سمجھتا تھا کہ شاید یہ کار میری ہے۔</p>\n', created = 1490849255, expire = 1490935655, headers = '', serialized = 0 WHERE cid = '1:0e09b5f600f83c5fdc030cc87e5e953a' in /home/freeurdujokes/public_html/includes/cache.inc on line 112.
  • user warning: Table './freeurdujokes/cache_filter' is marked as crashed and should be repaired query: SELECT data, created, headers, expire, serialized FROM cache_filter WHERE cid = '2:15a4c373ca9426ce0f4beb79abf6d8a8' in /home/freeurdujokes/public_html/includes/cache.inc on line 27.
  • user warning: Table './freeurdujokes/cache_filter' is marked as crashed and should be repaired query: SELECT data, created, headers, expire, serialized FROM cache_filter WHERE cid = '2:4c70e2cdcbf962ac4ec9fff9e46f9b05' in /home/freeurdujokes/public_html/includes/cache.inc on line 27.
  • user warning: Table './freeurdujokes/cache_filter' is marked as crashed and should be repaired query: SELECT data, created, headers, expire, serialized FROM cache_filter WHERE cid = '2:0855055faa5769cc17f8af0af3872566' in /home/freeurdujokes/public_html/includes/cache.inc on line 27.
  • user warning: Table './freeurdujokes/cache_filter' is marked as crashed and should be repaired query: SELECT data, created, headers, expire, serialized FROM cache_filter WHERE cid = '2:3daa926919d3ddaaf949282f224bbbbb' in /home/freeurdujokes/public_html/includes/cache.inc on line 27.

ایک شخص سوچتا ھے ھوٹل سے مفت کھانا کیسے

ایک شخص سوچتا ھے ھوٹل سے مفت کھانا کیسے کھاؤں۔ اس کا دوست اس کو کہتا ھے یہ کون سی مشکل بات ھے۔

تم ایک مری ھوئی مکھی ساتھ لے جانا۔ خوب کھانا کھانا۔ جب پیٹ بھر جائے تو تھوڑا سا سالن مزید مانگنا۔ اس میں مکھی ڈال کر شور مچا دینا۔ وہ تمہاری منتیں کر کے بھیج دیں گے۔

وہ ایسا ھی کرتا ھے۔ خالی جیب جا کے خوب کھاتا ھے۔ جب آخر میں کہتا ھے تھوڑا سا سالن مزید ڈال دیں تو بیرا کہتا ھے سر ھم معذرت خواہ ھیں سالن ختم ھو گیا ھے۔

تو وہ گھبرا کے کہتا ھے اچھا پھر اس مکھی کا کیا کروں۔

فرمابردار بیوی کیسی ہوتی ہےشوھر: آج کھ

فرمابردار بیوی کیسی ہوتی ہے
شوھر: آج کھانے میں کیا بناؤ گی
بیوی: جو آپ کہیں
شوھر: واہ بھئی واہ ایسا کرو دال چاول بنا لو
بیوی: ابھی کل ہی تو کھائے تھے
شوھر: تو سبزی روٹی بنالو
بیوی: بچے نہیں کھائیں گے
شوھر: تو چھولے پوری بنالو چینج ہوجائے گا
بیوی: جی سا متلا جاتا ہے مجھے ھیوی ھیوی لگتا ہے
شوھر: یار آلو قیمہ بنالو اچھا سا
بیوی: آج منگل ہے گوشت نہیں ملے گا
شوھر: پراٹھہ انڈہ

ایک شخس نے ہوٹل میں کھانا کھایا اور اس

ایک شخس نے ہوٹل میں کھانا کھایا اور اس کے بعد چمچہ صاف کرنے لگا۔ بیرا بھاگتا ہو اآیا۔ بابو جی چمچہ نہ صاف کریں وہ شخص بولا اگر صاف نہ کروں گا تو جیب گندی ہو جائے گی۔

ہوٹل میں ویٹر بھنی ہوئی مرغی کی پلیٹ ر

ہوٹل میں ویٹر بھنی ہوئی مرغی کی پلیٹ رکھ کر جانے لگا تو گاہک نے اسے روک کر کہا۔ یہ دیکھو ، اس کی ایک ٹانگ کہاںگئی.؟ ویٹر نے جواب دیا۔ میرا خیال تھا کہ آپ اسے کھائیں گے اس کے ساتھ رقص نہیں کریں گے۔

ایک آدمی پرانی سی چھکڑا کار پر ہوٹل آی

ایک آدمی پرانی سی چھکڑا کار پر ہوٹل آیا اور ہوٹل کے ملازم سے بولا۔ بھئی ذرا کار کا خیال رکھنا ، میں چائے پینے جا رہا ہوں۔
تھوڑی دیر بعد اس نے واپس آ کر ملازم کو دو روپے ٹپ دی۔ ملازم نے کہا : دو روپے اور دیجئے۔
اس آدمی نے حیرت سے پوچھا وہ کس لیے؟
ملازم: شرمندگی کے۔ کیونکہ جو بھی یہاں سے گزرتا تھا اس کار کو دیکھ کر یہی سمجھتا تھا کہ شاید یہ کار میری ہے۔

Syndicate content