چار افیمی نشے میں دھت تھے۔ اتنے میں ای

چار افیمی نشے میں دھت تھے۔ اتنے میں ایک افیمی نے ایک گھر کا دروازہ کھٹکھٹایا۔ اندر سے عورت نے پوچھا’’کون ہے؟‘‘
افیمی بولا: ’’ذرا باہر آکر اپنے شوہر کو پہچان کر لے جائیں تاکہ باقی لوگ بھی اپنے اپنے گھر جا سکیں

بیوی نے اپنے شوہر۔۔۔۔ کو فرائی پین سے ما

بیوی نے اپنے شوہر۔۔۔۔ کو فرائی پین سے مارا ۔
شوہر ۔۔۔۔ یہ کس لیے مارا ہے اب مجھے؟۔
بیوی۔۔۔۔۔تمہاری جیب سے ایک کاغذ ملا ہے جس پر کسی جینی کا نام لکھا ہے،
شوہر۔۔۔۔ وہ ، وہ تو میں نے پچھلے دنوں گھوڑوں کی ریس میں حصہ لیا تھا، اس میں گھوڑے کا نام تھا *جینی*۔
اگلے دن بیوی نے پھر شوہر کو فرائی پین سے مارا۔
شوہر ۔۔۔۔۔ چلا کر۔۔۔ اب یہ کس لیے مارا ہے ؟۔
بیوی۔۔۔۔۔ آج اسی گھوڑے کا فون آیا تھا ،تمہارے لیے۔۔

اخبار کے دفتر میں کام آخری مراحل میں تھا۔ کاتب نے ایڈیٹر کو آواز دی: جناب ابھی ص

اخبار کے دفتر میں کام آخری مراحل میں تھا۔ کاتب نے ایڈیٹر کو آواز دی: جناب ابھی صفحہ میں پانچ چھ لائن کی جگہ بچ رہی ہے کیاکروں؟
ایڈیٹر: خبر لگادو کہ امین آباد میں کار اور گدھے میں ٹکرہوگئی جس میں تین لوگ زخمی ہوگئے۔
کاتب نے تھوڑی دیر بعد پھر آواز دی: جناب ابھی بھی ڈیڑھ لائن بچ رہی ہے۔
ایڈیٹر: آگے لکھ دو کہ ابھی اس خبر کی تصدیق نہیں ہوسکی ہے۔