دو ننھے بچے مارک اور ٹونی بہت شرارتی تھے

Joke Body

دو ننھے بچے مارک اور ٹونی بہت شرارتی تھے۔ اتنے شرارتی کہ اڑوس پڑوس میں بھی کوئی شرارت ہوجاتی تو سب کو یقین ہوتا کہ ان دونوں نے ہی کی ہوگی۔ ان کی شرارتوں کیوجہ سے انکی ماں بہت پریشان رہتی تھی۔ ایک دن وہ محلے کے چرچ میں گئی اور پادری سے اپنی پریشانی بیان کی۔ پادری نے اسے تسلی دی اور کہا کہ کل ایک بچے کو لے کر چرچ آ جانا۔ عورت اگلے دن ایک بچے کو لے کر چرچ پہنچ گئی۔
پادری نے چہرے پر غصہ طاری کرتے ہوئے بچے سے رعب دار آواز میں پوچھا۔
“ کیوں بچے ! کیا تم جانتے ہو گاڈ (خدا ) کہاں ہے ؟“
ننھا مارک سہم گیا اور خاموشی سے پادری کی طرف دیکھتا رہا۔ پادری نے سوچا بچہ میرے رعب میں آرہا ہے۔ لہذا پھر اور اونچی آواز میں پوچھا۔
“ بچے ! جلدی بتاؤ تم گاڈ (خدا) کے بارے میں کیا جانتے ہو؟؟“
ننھا مارک خوفزدہ ہوگیا اور چرچ سے لپک کر باہر نکلا اور گھر کو دوڑ لگا دی۔
ہانپتا ہانپتا گھر پہنچا تو دوسرے شرارتی بھائی ٹونی نے بے تابی سے پوچھا کہ بتاؤ چرچ میں کیا ہوا ؟؟؟
“یار ٹونی بھائی ! اب کے ہم دونوں بہت برے پھنس گئے ‌“ مارک کے تشویش سے کہا
“ کیوں ؟ آخر ہوا کیا چرچ میں ؟؟“ ٹونی کا تجسس اور پریشانی بڑھ گئی
“یار کیا بتاؤں۔ پادری کا گاڈ گم ہوگیا اور وہ ہم پر شک کررہا ہے“ مارک نے وضاحت کی

Rate This Joke
No votes yet
Urdu-Jokes

شاعر انقلاب جوش ملیح آبادی کی مولانا ابو

Joke Body

شاعر انقلاب جوش ملیح آبادی کی مولانا ابولاعلی مودودی سے خوب گاڑھی چھنتی تھی۔ اس بے تکلفی میں اکثر برجستہ جملوں کا نہایت لطیف تبادلہ جاری رہتا تھا۔
ایک دفعہ مولانا مودودی بیمار پڑ گئے۔ جوش صاحب خبر سنتے تیمار داری کو پہنچ گئے۔ بیماری کا حال پوچھا تو مولانا نے فرمایا؛
"ڈاکٹروں نے پتھری تشخیص کی ہے۔۔"
سنتے ہی جوش صاحب کی حس ظرافت پھڑک اٹھی۔
"اف ظالم، اپنے کرموں کی معافی مانگ، تو تو بڑا گنہگار ہے۔۔"
مولانا کو حیرت ہوئی؛ "جوش صاحب، پتھری کا گناہوں سے کیا تعلق ہے۔۔"
جوش صاحب فورا کہنے لگے؛ "مولانا، آپ تو اندر سے سنگسار ہو رہے ہیں۔۔۔"

Rate This Joke
No votes yet
Urdu-Jokes

ایک صاحب نہایت پابندی سے مسجد میں پانچ وقت کی حاضری دیا کرتے تھے ۔۔۔ لوگ ان کے ت

Joke Body

ایک صاحب نہایت پابندی سے مسجد میں پانچ وقت کی حاضری دیا کرتے تھے ۔۔۔ لوگ ان کے تقوی سے بہت متاثر تھے ۔۔
ایک شخص نے جب انھیں نہایت انہماک سے نماز ادا کرتے دیکھا ۔۔۔تو اپنے ساتھی سے کہنے لگا
" یہ جو شخص نماز ادا کر رہا ہے ۔۔نہایت متقی اور پرہیزگار ہے۔۔ :
اس پر وہ صاحب نماز توڑ کر بولے
: اور جناب ۔۔ میں حاجی بھی ہوں ۔۔

Rate This Joke
No votes yet
Urdu-Jokes

فنکار جیب کترادہلی میں‌ایک جیب کترے تھ

Joke Body

فنکار جیب کترا
دہلی میں‌ایک جیب کترے تھے جن کا انگوٹھا قینچی کے پھل کی طرح‌دودھارا تھا اور کلمے کی انگلی پتھر پر گھس گھس کر شیشے کی مانند سخت کرلی تھی۔بس جہاں ان اس کی انگلی لگ جاتی تو قینچی کو پیچھے چھوڑ دیتی تھی۔ایک صاحب کوئی باہر کے، خواجہ حسن نظامی کے ہاں آئے اور شکایت کی۔
“دہلی کے جیب کترے کی بڑی دھوم سنی تھی۔آج ہمیں دہلی کے بازاروں میں پھرتے چار دن ہو گئے ہیں لیکن کسی کو مجال نہیں‌ہوئی کہ ہماری جیب کی طرف آنکھ اٹھا کر بھی دیکھ لیں۔“
خواجہ صاحب نے اس چٹکی باز کو بلوایا اور ان صاحب سے اس چٹکی باز کا آمنا سامنا کرایا۔اس ہنر مند نے مسکرا کر کہا،
“خواجہ صاحب! میرے شاگردوں نے ان صاحب کا حلیہ بتایا تھا۔چار دن سے انگرکھے کی اندر کی جیب میں‌پیتل کی آٹھ ماشیاں (آٹھ ماشا وزن کے سکے) ڈالے گھوم رہے ہیں اور وہ بھی گنتی کے چار۔اب آپ ہی بتایئے کہ کون جعلی سکوں پر اپنی نیت خراب کرے گا۔“

Rate This Joke
No votes yet
Urdu-Jokes