ایک فارم پر بندھے گھوڑے کو ہر شخص کچھ نہ کچھ کھانے کو دے جاتا اس خیال سے کہ گھوڑ

ایک فارم پر بندھے گھوڑے کو ہر شخص کچھ نہ کچھ کھانے کو دے جاتا اس خیال سے کہ گھوڑا بیمار نہ ہو جائے مالک نے تنگ آکر وہاں ایک بورڈ لگا دیا س پر لکھا تھا:
برائے مہربانی گھوڑے کو کچھ نہ کھلائیں ۔ ۔ ۔ ۔ ۔ ۔دستخط مالک
چند دنوں بعد وہاں ایک اور بورڈ بھی لگا ہوا تھا جس پر لکھا تھا:
برائے مہربانی ساتھ والے بورڈ پو کوئی دھیان نہ دیجیے ۔ ۔ ۔ ۔ ۔دستخط گھوڑا