کسی بات سے ناراض ہو کر والد صاحب نے صا

کسی بات سے ناراض ہو کر والد صاحب نے صاحبزادے کو ایک تھپڑ جڑ دیا۔
تھوڑی دیر بعد بچے نے اپنے والد سے سوال کیا: کیاآپ کے والد بھی آپ کومارتے تھے؟
والد: ہاں۔
بچہ: ان کے والد بھی انکو مارتے تھے؟
والد :ہاں۔
بچہ : کیاانکے والدکے والد بھی انکومارتے تھے؟
والد :ہاں بھئی ہاں، لیکن تم یہ کیوں پوچھ رہے ہو؟
بچہ :میں جانناچاہ رہاہوں کہ آخر یہ ظلم کب سے ہوتاچلاآرہاہے

ایک بیوی کو اپنے شوھر پر بلاوجہ شک کرنے

ایک بیوی کو اپنے شوھر پر بلاوجہ شک کرنے کی بہت عادت تھی، جب بھی وہ دفتر سے ،کسی پارٹی سے یا کسی بھی جگہ سے واپس آتا تو وہ اس کے کوٹ کو بڑے غور سے چیک کرتی، اگر کوئی بال نظر آجاتا تو پھر شوھر بچارے کی شامت آجاتی، ایک دن شوھر دفتر سے واپس آیا ،اور بیوی نے عادت سے مجبور ھو کر اپنے شوھر کا لباس پوری طرح چیک کیا لیکن کچھ نہ نظر آیا۔
آخر وہ تھک ھار کر اور منہ بسور کر اپنے خاوند کو بولی
اچھا! اب تم نے گنجی عورتوں سے بھی دوستی کرنی شروع کر دی ھے۔